Jump to content

ارون جیٹلی سٹیڈیم

آزاد انسائیکلوپیڈیا، وکیپیڈیا توں

سانچہ:Merge

ارون جیٹلی اسٹیڈیم
फिरोज शाह कोटला ग्राउंड
فیروز شاہ کوٹلہ اسٹیڈیم
جانکاری کھیل دا میدان
تھاںBahadur Shah Zafar Marg، دہلی
جغرافیائی متناسق نظام28°38′16″N 77°14′35″E / 28.63778°N 77.24306°E / 28.63778; 77.24306متناسقات: 28°38′16″N 77°14′35″E / 28.63778°N 77.24306°E / 28.63778; 77.24306
قیام1883
گنجائش45,000
ملکیتDelhi District Cricket Association
مشتغلضلع دہلی کرکٹ ایسوسی ایشن
ورتوں کاردہلی کرکٹ ٹیم، دہلی کیپیٹلز
اسمائے اینڈ
Stadium End
Pavilion End
بین الاقوامی معلومات
پہلا ٹیسٹ10–14 نومبر 1948: بھارت بمقابلہ ویسٹ انڈیز
آخری ٹیسٹ3–7 دسمبر 2015: بھارت بمقابلہ جنوبی افریقا
پہلا ایک روزہ15 ستمبر 1982: بھارت بمقابلہ سری لنکا
آخری ایک روزہ11 اکتوبر 2014: بھارت بمقابلہ ویسٹ انڈیز
پہلا عالمی ٹی2023 مارچ 2016: افغانستان بمقابلہ انگلینڈ
آخری عالمی ٹی2030 مارچ 2016: نیوزی لینڈ بمقابلہ انگلینڈ

ارون جیٹلی اسٹیڈیم ایک کرکٹ کا میدان اے جو (پہلے کے طور پر جانا جاتا اے فیروز شاہ کوٹلہ اسٹیڈیم) بہادر شاہ ظفر رستہ، دہلی۔ اس کی بنیاد 1883ء میں رکھی گئی اور یہ ایڈن گارڈنز، کولکاتہ کے بعد، بھارت کا دوسرا قدیم ترین فعال کرکٹ میدان اے۔

ارن جیتلی سٹیڈیم
کوٹلہ
وکھ-وکھ نظریہ توں ارن جیتلی سٹیڈیم دا نظارہ
مکمل نامارن جیتلی سٹیڈیم
سابقہ نامفروز شاہ کوٹلہ گراؤنڈ
مقامبہادر شاہ ظفر رستہ، دلی
گنجائش41,820[۱]
تعمیر
تعمیراتی لاگت114 کروڑ
ارن جیتلی سٹیڈیم (پہلاں فروز شاہ کوٹلہ گراؤنڈ وجوں جانیا جاندا) اک کرکٹ سٹیڈیم اے جو بہادر شاہ ظفر رستہ، نویں دلی وکھے واقع اے۔[۲] 1883 وچ فروز شاہ کوٹلہ گراؤنڈ (کوٹلہ دے قلعے دے نیڑے ہون کرکے) وجوں قائم کیتا گیا، کولکاتہ دے ایڈن گارڈن توں بعد، ایہہ دوجا سبھ توں پرانا قومانتری کرکٹ سٹیڈیم اے جو اجے وی بھارت وچ چلدا اے۔ اعزاز دے معاملے وچ، ڈی۔ڈی۔سی۔اے۔ نے سابقہ کپتان بشن سنگھ بیدی، بھارت دے سابقہ آلراؤنڈر مہیندر امر ناتھ اتے موجودہ کپتان وراٹ کوہلی دے نام تے سٹیڈیم دے تن سٹینڈا دا نام دتا۔ رمن لامبا اتے پرکاش بھنڈاری دے بعد مخالف دھر دے ڈریسنگ روم توں بعد گھریلو ٹیم دے ڈریسنگ روم دا نام رکھن دا فیصلہ وی کیتا گیا۔[۳]

سال 2016 تک، بھارت دی قومی کرکٹ ٹیم ٹیسٹ میچاں وچ 28 توں ودھ سالاں توں اتے اس میدان وچ اک روزہ میچاں وچ 10 سال توں ودھ ویلے توں ہاری نہیں اے۔

اس توں پہلاں سنیل گاوسکر نے اس میدان وچ اپنا 29 واں ٹیسٹ میچ کھیڈیا اتے ڈون بریڈمین دے اوس ویلے دے 29 سینکڑے دی برابری کیتی۔ گراؤنڈ نوں انل کمبلے نے پاکستان خلاف پاری وچ 10 وکٹاں اتے گوسکر نوں پچھاڑن لئی 35 ویں ٹیسٹ میچ وچ سبھ توں ودھ قومانتری ٹیسٹ سینکڑے لگا کے بلیباز بنن لئی وی جانیا جاندا اے۔ 25 اکتوبر، 2019 تک اس نے 34 ٹیسٹ، 25 ونڈے اتے 5 ٹی -20 میچاں دی میزبانی کیتی۔

12 ستمبر 2019 نوں سابقہ مالیات وزیر اتے ڈیڈیسیئے دے سابقہ پردھان ارن جیتلی دی یاد وچ سٹیڈیم دا نام بدل دتا گیا۔ اس سٹیڈیم دا نام اس راجنیتا دے ناں اُتے رکھن دا فیصلہ سی، جو کسے ویلے ڈیڈیسیئے دا پردھان ہندا سی اتے بیسیسیائی دا اپ-پردھان وی سی، جدوں اس دی موت 24 اگست 2019 نوں ہوئی سی۔ نام بدلن اُتے بولدیاں ڈیڈیسیئے دے موجودہ پردھان رجت شرما نے کیہا: "ایہہ ارن جیتلی دی حمایت اتے حوصلہ سی کہ وراٹ کوہلی، ورندر سہواگ، گوتم گمبھیر، اشیش نہرا، رشبھ پنت اتے ہور بہت سارے کھڈاریاں نے بھارت نوں مان دوایا اے۔"

نام بدلن دی اعلان کرن توں بعد ڈیڈیسیئے نے سپشٹیکرن وی جاری کردیاں کیہا کہ صرف سٹیڈیم دا نام بدلیا جا رہا اے پر میدان نوں "فروز شاہ کوٹلہ گراؤنڈ" ہی کیہا جاویگا۔


شماریات[سودھو]

بھارت ٹیم نے یہاں اب تک 10 ٹیسٹ میچ کھیلے ہیں۔

  • سب سے بہتر کارکردگی:- بھارت – 10 فتوحات
  • سب سے بری کارکردگی:- انگلینڈ – 3 فتوحات
  • ایک اننگ میں سب سے زیادہ اسکور : 644/8 ویسٹ انڈیز نے، 6 فروری 1959
  • ایک اننگ میں کم ترین اسکور : 75 پر تمام آؤٹ بھارت کے، 25 نومبر 1987
  • پہلی بلے بازی کر کے فتوحات : 5
  • پہلے گینڈ بازی کر کے فتوحات : 13
  • اوسط اننگ اسکور : 288
  • سب سے زیادہ دوڑیں : دلیپ ونگسرکار (671 دوڑیں)
  • سب سے زیادہ انفرادی اسکور : 230* Bert Sutcliffe، بھارت کے خلاف، 16 دسمبر 1955
  • سب سے بہتر گیند بازی : انیل کمبلے (58 ووکٹیں)

اس میدان پر سب سے زیادہ اسکور ویسٹ انڈیز کا اے، جس نے 1959ء میں 8 ووکٹوں پر 644 اور 1948ء میں تمام ٹیم آؤٹ، 631 اسکور بنایا۔ اس کے بعد دوسرا سب سے زیادہ اسکور بھارت کا اے جس نے 7 ووکٹوں پر 613 اسکور، 2008ء میں بنایا۔ سب سے زیادہ رنز دلیپ وینگسرکر (673 دوڑیں) اور سنیل گاوسکر (668 دوڑیں) اور سچن ٹنڈولکر (643 دوڑیں)۔ سب سے زیادہ ٹیسٹ ووکٹیں، انیل کمبلے (58 ووکٹیں) اور کپیل دیو (32 ووکٹیں)اور بھاگوت چندر شیکھر (23 ووکٹیں)۔

ایک روزہ کرکٹ میں سب سے زیادہ اسکور ویسٹ انڈیز نے بنایا اے، 2011ء کرکٹ عالمی کپ میں، 8 ووکٹوں پر 330 اسکور بنایا۔ دوسرے نمبر پر پاکستان ٹیم 2005ء میں 8 ووکٹوں پر 303 میں اور آسٹریلیا نے 1998ء میں 3 ووکٹوں 294۔ سب سے زیادہ ایک روزن کرکٹ میں اسکور scored here is by سچن ٹنڈولکر (300 دوڑیں) پھر محمد اظہر الدین (267 دوڑیں) اور رکی پونٹنگ (245 دوڑیں)۔ Kemar Roach، Harbhajan Singh اور Ajit Agarkar اس میدان پر 7 ووکٹیں لیں۔

کرکٹ عالمی کپ[سودھو]

اس میدان پر بھارت نے تین بار عالمی کپ کے کئی میچوں کی میزبانی، کرکٹ عالمی کپ 1987، کرکٹ عالمی کپ 1996 اور کرکٹ عالمی کپ 2011۔

ٹوئنٹی20 بین الاقوامی[سودھو]

میدان پر 2016ء آئی سی سی عالمی ٹی ٹوئینٹی کے کچھ مقابلے منعقد ہوئے۔ تین میچ گروپ اے کے اور ایک سیمی فائنل میچ ہوا۔ اس میدان پر پہلا ٹوئنٹی20 بین الاقوامی میچ گروپ اے انگلستان قومی کرکٹ ٹیم بمقابلہ افغانستان قومی کرکٹ ٹیم تھا۔

فیروز شاہ کوٹلہ پر ہونے والے ٹوئنٹی20 بین الاقوامی کی فہرست:

شمار۔ فاتح ہارنے والا نتیجہ تاریخ سال
1  انگلستان (142/7)  افغانستان (127/9)  انگلستان 15 دوڑوں سے 23 میچ 2016ء آئی سی سی عالمی ٹی ٹوئینٹی
2  انگلستان (171/4)  سری لنکا (161/8)  انگلستان 10 دوڑوں سے 26 میچ 2016ء آئی سی سی عالمی ٹی ٹوئینٹی
3  دکھنی افریقہ (122/2)  سری لنکا (120)  دکھنی افریقہ 8 ووکٹوں سے 28 میچ 2016ء آئی سی سی عالمی ٹی ٹوئینٹی
4  انگلستان (159/3) سانچہ:Country data NZ (153/8)  انگلستان 7 ووکٹوں سے 30 میچ 2016ء آئی سی سی عالمی ٹی ٹوئینٹی
ماخذ:۔[۴] آخری ترمیم: 30 مارچ 2016۔

ہور ویکھو[سودھو]

حوالے[سودھو]

  1. Lua error in ماڈیول:Citation/CS1/ar at line 3440: attempt to call field 'set_selected_modules' (a nil value).
  2. Lua error in ماڈیول:Citation/CS1/ar at line 3440: attempt to call field 'set_selected_modules' (a nil value).
  3. Lua error in ماڈیول:Citation/CS1/ar at line 3440: attempt to call field 'set_selected_modules' (a nil value).
  4. Cricket Records | Records | Feroz Shah Kotla, Delhi | Twenty20 Internationals | Match results | ESPNcricinfo

باہرلےجوڑ[سودھو]