ناپاں دا انٹرنیشنل پربندھ

وکیپیڈیا توں
Jump to navigation Jump to search

ناپاں دا انٹرنیشنل پربندھ میٹرک پربندھ دی نویں مورت اے۔ ایدی نیو تے ست ناپ نیں تے اسانی لئی 10 نوں چنیا ہویا اے۔

تن دیساں نے آدھکارک روپ تے اس نظام نوں اپنی پورن یا مڈھلی ماپ نظام قبول نہیں کیتا۔ ایہہ دیش ہن: لائبیریا، میانمار تے امریکہ۔

ilf jgzsjal اکائی نظام (مختصر وچSI، فرینچ Le Système International d'unitésدا مختصر روپ)، میٹرک نظام دا جدید روپ اے۔ عامَ طور تے صفر تے دس دے گنانکاں وچ بنائی گئی اے۔ ایہہ سائنس تے وپار دے کھیتر وچ دنیا دی سبھ توں ودھ استعمال ہون والی نظام اے۔ [1][2][3]

پرانی میٹرک نظام وچ کئی اکائیاں دے اکٹھے استعمال کیتے جاندے سن۔ SI نوں 1960 وچ پرانی سینٹیمیٹر-گرام-سیکنڈ نظام دی تھاں جس اندر کئی اوکڑاں سن میٹر-کلوگرام-سیکنڈ یعنی (MKS) نظام راہیں موکلا کیتا گیا سی۔ SI نظام ستھر نہیں رہندی، ایہہ لگاتار ودھدی رہندی اے، مگر ایہہ سچ اے کہ اکائیاں انتردیشی سمجھوتیاں رانہی ہی بنائیاں تے بدلیاں جاندیاں ہن۔

ایہہ نظام لگبھگ دنیا ویاپی پدھر تے لاگوُ اے اور بہتے دیش اس توں علاوہ کسے ہور نظام نوں مانتا نہیں دیندے۔ مگر [[امریکہ امریکہ]] تے برٹین اس دے اپواد ہن ، جتھے ہن بھی غیر-SI اکائیاں دیا پرانیاں پرنالیاں لاگوُ ہن۔بھارت وچ ایہہ نظام 1 اپریل، 1957 وچ لاگوُ ہوئی ۔ اسدے نال ہی اتھے نواں پیسہ وی لاگوُ ہویا، جو کہ خود دشملوَ نظام پر مشتمل اے۔[4]

اس نظام وچ کئی نویاں اکائیاں مقرر کیتیاں گئیاں ہن۔ اس نظام وچ ستّ ادھار اکائیاں یا مول اکائیاں(میٹر، کلوگرام، سیکنڈ، ایمپیئر، کیلون، مول، کینڈیلا، کولمب) تے ہور کئی سنتان اکائیاں ہن۔ کچھ سائنسی تے تہذیبی کھیتراں وچ ایس آئی نظام دے نال نال ہور اکائیاں وی استعمال وچ لیائیاں جاندیاں ہن۔ SI اپسرگاں دے زریعہ راہیں بہت چھوٹیاں تے بہت وڈیاں منتیاں نوں اسانی نال بیان کیتا جا سکدا اے ۔ سانچہ:TOCleft



اکائیاں دا کار وہار وچ روپمان ہونا[لکھو]

کسی اکائی دے مول ذکر تے اس دے کار وہار وچ روپمان ہون وچ بہت فرق اے۔ ہریک SI ادھار اکائی دا ذکر بہت ساودھانی نال بیانیا گیا گئی اے تاکِ اوہ لامسال ہووے تے نال نال اک ٹھوس ادھار پیش کرے جس تے ادھار رکھ کے سبھ توں خالص ماپن کیتے جا سکن۔ اک اکائی دے ذکر دا کار وہار وچ روپمان ہون دا مطلب اے کہ جسسے کہ وہ تشریح اس اکائی کی بھانتِ ہی اسکی مقدار کے مان اور اسسے جڈی انشچتتا کو قائم کرنے ہیتُ؛ استعمال کی جا سکے۔ کچھ اہم اکائیوں کی پربھاشائیں کیسے کاریانوت کی جاتی ہیں، یہ BIPM کی ویبسائیٹ پر دیا گیا اے[5] ایک SI ویتپنن اکائی ادوتیی روپ صرف SI مول اکائیوں کے روپ میں ہی متاثر ہوتی اے۔ اداہرنت ودیت پرترودھ کی SI ویتپنن اکائی، اوہم (چنھ Ω)، اس سمبندھ سے ہی ادوتیی روپ سے متاثر ہوتی اے: Ω = m2 kg s−3 A−2، جو کہ ودیت پرترودھ کی مقدار، کی تشریح کا ہی پرنام اے۔ ویسے کوئی بھی طریقہ، جو کہ بھوتکی کے سددھانتوں/نیموں سے سامنجسی رکھدا ہو، وہ کسی بھی SI اکائیوں کے کاریانوین ہیتُ استعمال ہو سکتا اے۔ [6]

اتہاس[لکھو]

1rightarrow.png مکھ لیکھ لئی ویکھو: میٹر, کلوگرام, سیکنڈ, ایمپییر, کیلون, مول (اکائی), کینڈیلا en کولمب

میٹرک نظام کو ویجنجانکوں کے گروہ ولوں ابھکلپت کیتا گیا سی۔ انمیں اینٹونی لورییٹ لیواشئے پرمکھ تھے، جنھیں جدید رساینشاستر کا جنک کہا جاتا اے۔ اس گروہ کو ترکسنگت ماپن نظام کا اساری کرنے ہیتُ؛ فرانس کے بادشاہ لئی XVI ولوں ایکیکرت ایوں ادھکرت کیا گیا تھا۔ فرانسیسی کرانتِ کے اصوبہ نئی سرکار ولوں یہ نظام انگیکرت کر لی گئی تھی۔[7] 1 اگست، 1793، کو راشٹریی سممیلن ولوں نیا دشملوَ میٹر بھی انگیکرت کیا گیا اور ایک استھایی لمبائی کے ساتھ-ساتھ ہی انی دشملوَ اکائیاں بھی متاثر ہئیں۔ 7 اپریل، 1795 (Loi du 18 germinal, an III) کو، gramme ایوں kilogramme نے پرانی ووکیبولری "gravet" (شودھت روپ "milligrave") ایوں "گریو" کا ستھان لیا۔ 10 دسمبر، 1799 کو، میٹرک نظام کو مستقل روپ سے فرانس میں اپنایا گیا۔

آج عالمی بھر میں استعمال ہو رہی میٹرک نظام نے کئی بدلاو دیکھے ہیں۔ اسنے کئی پرنپراگت پرنالیوں کو ادھکرمت بھی کیا اے۔ دوتیی عالمی یددھ کے بہت بعد تک کئی بھنن ماپن پرنالیاں عالمی بھر میں پریکت ہو رہیں تھیں۔ انمیں سے کئی پرنالیاں، میٹرک نظام کی ہی بھننک تھی، جبکِ انی یا تو امپیریم نظام یا پھر امریکی نظام پر مشتمل تھیں۔ تب یہ آوشیکتا سددھ ہئی کہ ان سب کا میٹریکرن ہونا چاہیے، جسسے ایک زمین ماپن نظام بنائی جا سکے۔ پھلت نوواں بھار ایوں ماپن پر سامانی سممیلن (CGPM) 1948 میں ہوا جویلے بھار ایوں ماپن انترراشٹریی سمتِ (CIPM) کو ویجنجانک، پرودیوگک ایوں شکشن سمتیوں کی ماپن سمبندھی آوشیکتاؤں کا ایک انترراشٹریی ادھیین کرنے کو ڈاریکٹ کیا گیا۔

اس ادھیین کے پرناموں پر مشتمل، دسویں CGPM نے 1954 میں یہ نرنی کیا کہ چھ مول اکائیوں سے ایک انترراشٹریی نظام ویتپنن کی جائے، جو کہ یانترک ایوں ودیتچمبکیی ماتراؤں کی ساتھ ہی تاپمان ایوں درشٹِ سمبندھی وکرنوں کا ماپن مہیا کرا پائے۔ انمودت کی گئیں چھ مول اکائیاں تھیں میٹر، کلوگرام، سیکنڈ، ایمپییر، ڈگری کیلون ایوں کونڈیلا। 1960 میں، 11ویں CGPM نے اس نظام کا نامکرن انترراشٹریی اکائی نظام یا International System of Units، سنکشیپ میں SI جو مولت بنا اے پھرینچ سے: Le Système international d'unités۔ ساتویں مول اکائی، مول یا the mole، کو 1971 میں 14ویں CGPM میں جوڈا گیا۔

مستقبل دی ترقی[لکھو]

انتقومی مانکیکرن تنظیم جاں ISO کے مانک ISO 31 وچ انتراشری اکائی ڈھانچے دے بجلی دی ورتوں بارے قومانتری بپانی تکنیکی آیوگ (IEC) دی سفارش اے جس وچ اوہناں دے مانک IEC 60027 وی دھیان دین یوگ اے۔ اوہ کم حالے ہو رہا اے جس وچ دوواں نوں اکٹھے کر کے اک سانجھا مانک ISO/IEC 80000 بنے اتے جسنوں مکداراں دا قومانتری ڈھانچہ (International System of Quantities (ISQ)) کیہا جاوے۔

اکائیاں[لکھو]

1rightarrow.png مکھ لیکھ لئی ویکھو: مول اکائیاں, ویتپنن اکائیاں en SI اپسرگ

انتراشٹریی اکائی نظام میں اکائیوں کا گروہ اے، جسکے سددھش ہی اپسرگوں کے گروہ بھی ہیں۔ SI اکائیوں کو دو اپسموہوں میں بانٹا جا سکتا اے :-

ان اکائیوں کے ساتھ ہی

تالکا - 1 – SI مول اکائیاں[8]
نام چنھ مقدار
میٹر m لمبائی
کلوگرام kg بھار
سیکنڈ s سماں
ایمپییر A ودیت دھارا
کیلون K درجہ حرارت
مول (اکائی) mol مادہ دی مقدار
کنڈیلا cd لائیٹ

مول اکائی کے گنک بنانے ہیتُ، SI اپسرگ کو جوڈا جا سکتا اے۔ سبھی گنک دس کی پورن آبادی گھات کے ہیں۔ اداہرنت
کلو-= سہسر یا ہزار
ملِ-= ہزارواں حصہ یانِ ایک میٹر میں ایک ہجار ملمیٹر ہوتے ہیں، ساتھ ہی ایک ہجار میٹر سے ایک کلو میٹر بنتا اے۔
اپسرگوں کو ملایا نہیں جا سکتا اے۔ ایک کلوگرام کا دس لاکھواں حصہ اے ملگرام پرنتُ اسے ایک مائکرو-کلوگرام نہیں کہینگے۔

سانچہ:SI-اپسرگ

SI لیکھن پددھتِ[لکھو]

  • چنھوں میں کوئی اردھ/پورن ورام نہیں جڈا ہوتا، جب تک کہ وے واکی کے انت میں نہ ہوں۔
  • چنھ رومن میں سیدھے کھڈی ہوتے ہیں (جیسے میٹر کے لیے m, لیٹر کے لیے litres)، جسسے کہ وے گنت کے استھر مان سے پرتھک کیے جا سکیں (m اے بھار یا mass, l اے لمبائی یا length کے لیے)۔
  • اکائیوں کے لیے چنھ انگریجی کے چھوٹے اکشروں میں لکھے جاتے ہیں، سوای کسی ویکتِ کے نام سے بنے چنھوں کے۔ اداہرنت دباو کی اکائی پاسکل اے، بلیج پاسکل کے نام پر؛ اتئیو چنھ "Pa" لکھتے ہیں، لیکن پورن نام کے لیے pascal ہی لکھا جاتا اے۔
    • اسکا ایک اپواد اے لیٹر جسکے لیے "l" کو اسلیے چھوڈا گیا، کیونکِ وہ انگریجی انک "1" (ایک) یا بڈا اکشر آئی "i" جیسا لگتا اے۔ امریکی راشٹریی مانک ایوں تکنیک سنستھان ( نیشنل انسٹیٹیوٹ آف سٹینڈرڈس اینڈ ٹیکنولوجی NIST) نے بڈی اکشر "L" کے استعمال کی صلاحَ دی اے، ان دیشوں میں جہاں انگریجی استعمال ہوتی اے، پرنتُ باقی دیش وحی پرتھا استعمال کریں۔ یہ CGPM ولوں 1979 سے مانی اے۔ کررسو کبھی کبھی خاصکر جاپان ایوں یونان میں دیکھا گیا اے، پرنتُ اسے ابھی مانک سنگٹھنوں سے مالیڈر نہیں ملی اے۔ ادھک جانکاری ہیتُ، دیکھیں لیٹر۔
  • بہوچنیکرن ہیتُ SI نیم اے کہ اکائیوں کے چنھ بہووعدہ میں نہیں لکھے جاییں۔[9]، for example "25 kg" (not "25 kgs")۔
    • امریکی راشٹریی مانک ایوں تکنیک سنستھان ( نیشنل انسٹیٹیوٹ آف سٹینڈرڈس اینڈ ٹیکنولوجی) نے SI اکائیوں کے استعمال ہیتُ نردیشکا بنائی اے، جو اسکے اپنے پرکاشن میں، تتھا انی پریوکتاؤں ہیتُ اے۔[10] اس نردیشکا میں بہوچنیکرن کے سامانی گرائمر نیم دیے ہیں، جیسے "ہینری" کا انگریجی بہووعدہ اے ہینریز "henries"| اویلے لکس، ہرٹز ایوں سائمنس اپواد ہیں۔ یہ اپنے مول روپ میں ہی سبھی وچنوں میں پریکت ہوتی ہیں۔ یہ نیم صرف اکائیوں کے پورن ناموں پر ہی لاگوُ ہیں، نہ کہ انکے چنھوں پر۔
  • انک اور چنھ کو ایک بلینک سپیس یانِ رکت ستھان الگ کرتا اے، ادا0 "2.21 kg"، "7.3سانچہ:E m²"، "22 K" [11]। تلیی آنشک ڈگری (plane angular degrees)، منٹ اور سیکنڈ (، ′ and ″)، اسکے اپواد ہیں، جنھیں انک کے ایکدم بعد ہی انواریت لگایا جاتا اے۔
  • ہزار (سہسر) کی آبادی کو الگ کرنے ہیتُ بھی سپیس استعمال ہو سکتا اے (1000000) نیم یا پورن ورام کے علاوہ (1,000,000 یا 1.000.000)।
  • CGPM کے 10ویں سممیلن سن 2003 میں، اعلان ہوا کہ، دشملوَ کے چنھ ہیتُ پورن ورام یا نیم ورام چنھ پریکت ہو سکتا اے۔
  • کئی اکائیوں کے گنن سے بنیں، ویتپنن اکائیوں کے چنھوں کو ایک سپیس یا بندُ () سے جوڈا جاتا اے، جیسے "N m" یا "N·m"۔[12]
  • دو اکائیوں کے حصہ سے بننے والے چنھوں کو ترچھے سلیش (⁄)، یا رناتمک ایکسپونینٹ سے درشاتے ہیں، جیسے، میٹر پرتِ سے کے لیے "m/s"، "m s−1"، "m·s−1" یا یدِ پرنام دوئرتھی ہو، تو اسے استعمال نہ کریں، جیسے "kg/m·s²" بیہتر اے "kg·m−1·s−2" سے۔
  • چینی، جاپانی اور کوریائی بھاشاؤں میں کچھ خاص اکائیوں، اتیادِ کو ایک پورومقرر چنھ یا اکشر آونٹت کیا گیا اے، جو سادھارنتیا ایک خالی طبقہ کا روپ لے لیتا اے۔ انھیں یہاں دیا گیا اے۔
  • جب آیامرہت ماتراؤں کو لکھیں، تو ٹرم 'ppb' (parts per بلین) ایوں 'ppt' (parts per ٹرلین) کو بولی مکت ٹرم معنا گیا اے، کیونکِ بلین ایوں ٹرلین کی لمبائی بھاشاؤں میں بھنن ہو سکتی اے۔ اتئیو SI نے سے ان ٹرم سے بچنے کی صلاحَ دی اے۔ [2]۔ لیکن انکا کوئی وکلپ BIPM نے نہیں سجھایا اے۔

ورتنی کے انتر[لکھو]

  • کئی دیشوں میں metre ایوں litre کے ستھان پر meter ایوں liter استعمال ہوتے ہیں، جو کہ مانی مانے گیے ہیں۔ اسی پرکار ڈیکا ہیتُ بھی امریکہ میں deka پریکت ہوتا اے۔[13]
  • کئی انگریجی بولے جانے والے دیشوں میں "ampere" کو لگھُ روپ میں amp (ایکوعدہ) یا amps (بہووعدہ) روپ میں استعمال ہوتا اے۔

انترن کے کارک[لکھو]

وبھنن پرنالیوں میں استعمال کی جانے والی اکائیوں کے بیچ سمبندھ قائم کرنے ہیتُ اکائی پرنپرا یا اکائی کی مول تشریح سے بنایا جاتا اے۔ اکائیوں کے بیچ انترن ہیتُ انترن کارکوں کا استعمال کیا جاتا اے۔ انترن کارکوں کے کئی اڈیشن ہیں، اداہرنت دیکھیں پرششٹ بی، NIST SP 811.[10]

لمبائی، بھار، تاپمان ابھسارتا[لکھو]

سپیسپھک گریوٹی (وششٹ گھنتو) کو پرای SI اکائیوں میں، یا پانی کے حوالہ میں درشت کیا جاتا اے۔ کیونکِ ایک گھن جسکے ناپ ہیں 10 cm x 10 cm x 10 cm, اسکی آیتن ہوگی 1000 cm3 (پرای 1000 cc لکھا جاتا اے)، جو برابر اے 1 L کے؛ اور جب پانی سے بھرا جایے، تو اسکا بھار 1 kg ہوتا اے، اتئیو پانی کی سپیسپھک گریوٹی اے 1 g/cm3 اور یہ 0 ڈگری سیلسیس پر جم جاییگا۔

سانسکرتک مددے[لکھو]

میٹرک نظام کو مطلب ایوں دینک وانجی (ویاپار سمبندھی) زریعہ کے روپ میں زمین حمایت ملا اے۔ اسکا کارن بہت حد تک یہ بھی تھا کہ کئی دیشوں میں روڈھگت پرنالیوں میں کئی سددھانتوں کو سمجھانے کا سامرتھی نہیں تھی۔ ساتھ ہی کشیتریی بدلاووں کا مانکیکرن کر ایک عالمی ویاپی نظام، جو سرو مانی ہو، بنی۔ اسسے انترراشٹریی ویاپار کو بھی بڈھاوا ملا۔ ویجنجانک درشٹکون سے دیکھیں، تو اویلے اتیدھک بڈی اور اتسوکشم اکائیوں کو بھی دشملوَ کے استعمال سے بتایا جا سکتا اے۔

دینک ایوں ویجنجانک استعمال کی کئی اکائیاں، سات مول اکائیوں سے ویتپنن نہیں ہیں۔ کئی ماملوں میں یہ بدلاو BIPM. ولوں مانی بھی اے۔[14] Some examples include:

  • سمی کی کئی اکائیاں — منٹ (min)، گھنٹا (h)، دن (d) — استعمال میں ہیں SI اکائی سیکنڈ کے علاوہ بھی اور وششٹ مالیڈر حاصل بھی ہیں، جَدوَل 6 کے مطابق۔ [15]
  • ورش بھی سمملت نہیں ہوا اے، پرنتُ اسکا مانی انترن کارک اے۔[16]
  • سیلسیس تاپمان پیمانہ؛ جبکِ کیلون SI اکائی دینک استعمال میں کہاں آتی اے۔
  • ودیت توانائی کو پرای کلوووٹ آور میں بل کیا جاتا اے، بجای میگا جول کے۔
  • نوٹکل میل اور نوٹ (نوٹکل میل پرتِ گھنٹا) جو کہ جہازوں اور ہوائی سفر میں دوری ماپن میں پریکت ہوتا اے (1 انترراشٹریی نؤٹکل میل = 1852 m یا لگبھگ بھومدھی ریکھا کی 1 منٹ لیٹٹیوڈ پر)۔ اسکے ساتھ ہی، انترراشٹریی ناگر ومانن سممیلن کے انلگنک 5 ولوں اؤلٹیٹیوڈ ہیتُ فٹ کا "استھایی استعمال" کی انجنجا دی جاتی اے۔
  • آکاشیی دورییاں آکاشیی اکائیوں، پارسیک اور پرکاش-ورشاش میں ناپی جاتی اے، بجای پیٹامیٹر کے (ایک پرکاش-ورشاش لگبھگ 9.461 Pm یا 9 461 000 000 000 000 m کے برابر ہوتا اے)۔
  • فزکس اور راساینکی میں آنوک پرنمان اکائیاں استعمال کی جاتی ہیں، جیسے آنگسٹروم، الیکٹرون وولٹ، آنوک بھار اکائی اور بارن۔
  • کچھ بھوتک شعورت ابھی بھی سینٹیمیٹر-گگرام-سیکنڈ اکائی نظام اسکے ساتھ جڈی غیر-SI ودیت اکائیوں سمیت استعمال کرتے ہیں۔
  • کچھ دیشوں میں انوپچارک کپ اکائی برابر 250 ml پرچلت اے۔ ایسے ہی 500 g "میٹرک پاؤنڈ" بھی پریکت ہوتی اے۔
  • US میں رکت شرکرا ماپن کو ملگرام پرتِ ڈیسیلیٹر (mg/dL) میں کیا جاتا اے؛ کناڈا، اؤسٹریلیا، نیوجیلینڈ، اوشنیا اور یوروپ میں یہ مانک اے ملِ مول پرتِ لیٹر (mmol/L) یا mM (ملمولر)۔
  • رکتچاپ کو mmHg میں ماپا جاتا اے، بجای Pa کے۔

ویاپار[لکھو]

یوروپین سنگھ نے ایک نردیش دیا اے [17] جو غیر-SI چنھت سامان کی بکری کو 31 دسمبر 2009 کے بعد سے پرتبندھت کرتا اے۔ یہ سبھی اتپادوں، سنلگن نردیشوں اور کاگجوں، پیکنگ تتھا وجنجاپنوں پر لاگوُ ہوتا اے۔ لیکن 11 ستمبر 2007 کو، EU نے اعلان کیا اے، کہ برٹین کو اس نردیش سے مکت کرتے ہیں اور انکا امپیریل نظام ابھی بھی انیت روپین مانی ہوگا، ساتھ ساتھ میں میٹرک نظام کے دیا ہو تو۔[18]

انھیں بھی دیکھیں[لکھو]

سانچہ:اکائیاں سانچہ:ماپن پرنالیاں


تنظیم

مانک ایوں پرتھائیں

حوالے[لکھو]

  1. Official BIPM defintions
  2. SI اکائیاں دِی سمچے طور تے وضاحت اگے دتی باہری امترجال کڑی سانچہ:Plainlink تے کیتی گئی اے۔ اس وچ SI اکائیاں تے آدھارشدا، غلام اکائیاں دے وچلے رشتے دیسانچہ:Plainlink وی شامل اے۔ مول اکائیاں دا ذکر بھی اس سائیٹ تے ملیگا۔
  3. "In the International System of Units (SI) (BIPM, 2006)، the definition of the meter fixes the speed of light in vacuum c0، the definition of the ampere fixes the magnetic constant (also called the permeability of vacuum) μ0، and the definition of the mole fixes the molar mass of the carbon 12 atom M(12C) to have the exact values given in the table [Table 1, p.7]। Since the electric constant (also called the permittivity of vacuum) is related to μ0 by ε0 = 1/μ0c02، it too is known exactly." CODATA report
  4. [1]
  5. ::SI ویوہارک کاریانوین وورنکا
  6. اپروکت ٹپپنی بیورو انٹرنیشنل دیس پوئیدس ایت میزرس SI اکئی وورنکا p. 111 سے ہیں۔
  7. "The name "kilogram"". http://www1.bipm.org/en/si/history-si/name_kg.html. Retrieved on 2006-07-25. 
  8. Barry N. Taylor, Ed. [2001]. The International System of Units (SI). Gaithersburg, MD: National Institute of Standards and Technology, 9. Retrieved on 2007-10-30. 
  9. Bureau International des Poids et Mesures (2006). The International System of Units (SI). http://www.bipm.org/utils/common/pdf/si_brochure_8_en.pdf. Retrieved on 14 جولائی 2006. 
  10. 10.0 10.1 Taylor, B.N. (1995). NIST Special Publication 811: Guide for the Use of the International System of Units (SI). National Institute of Standards and Technology. http://physics.nist.gov/Pubs/SP811/contents.html. Retrieved on 9 جون 2006. 
  11. Taylor, B. N.. "NIST Guide to SI Units – Rules and Style Conventions". National Institute of Standards and Technology. http://physics.nist.gov/Pubs/SP811/sec07.html. Retrieved on 2007-04-12. 
  12. Barry N. Taylor, Ed. [2001]. The International System of Units (SI). Washington, DC: National Institute of Standards and Technology, 30. Retrieved on 2007-10-15. 
  13. "Definitions of the SI units: The twenty SI prefixes". http://physics.nist.gov/cuu/Units/prefixes.html. Retrieved on 2007-04-12. 
  14. http://www.bipm.org/en/si/si_brochure/chapter4/table8.html
  15. http://www.bipm.org/en/si/si_brochure/chapter4/table6.html
  16. http://physics.nist.gov/Pubs/SP811/appenB9.html#TIME
  17. Council Directive 80/181/EEC of 20 دسمبر 1979 on the approximation of the laws of the Member States relating to units of measurement and on the repeal of Directive 71/354/EEC، as amended with Directive 89/617/EEC (which changed the cutoff date in article 3.2 to 31 دسمبر، 1999) and Directive 1999/103/EC (which further changed the date to 31 دسمبر، 2009)۔ Retrieved on 2006-07-24.
  18. http://news.bbc.co.uk/1/hi/uk/6988521.stm

سانچہ:اکائیاں

باہری کنیاں[لکھو]

آدھکارک
اطلاع
اتہاس
پرو-میٹرکپریشر گروہ
پرو-کسٹمری میزرس پریشر گروہ