پاکستان دا آئین

وکیپیڈیا توں
Jump to navigation Jump to search

پاکستان دا آئین جاں دستور پاکستان پاکستان دے قانون نوں کیہا جاندا اے۔ اسنوں 1973 دا قانون وی کیہا جاندا اے۔ ایہہ قانون ذوالفقار علی بھٹو دے سرکار اتے حزب اختلاف دوہاں نے مل کے بنایا۔ ایہہ پارلیمینٹ ولوں 10 اپریل نوں منظور اتے 14 اگست 1973 نوں لاگوُ کیتا گیا۔


تریخی پچھوکڑ[لکھو]

اہم خصوصیات[لکھو]

  • پاکستان میں پارلیمانی نظام حکومت ہو گا وزیر اعظم حکومت کا سربراہ ہوگا اور اسے اکثریتی جماعت منتخب کرے گی۔
  • اسلام پاکستان کا سرکاری مذہب اے اور صدر اور وزیر اعظم کا مسلمان ہونا ضروری اے۔
  • پاکستان کا نام اسلامی جمہوریہ پاکستان اے۔
  • آئین میں ترمیم کے لیے ایوان زیریں میں دو تہائی اور ایوان بالا میں بھاری اکثریت ہونا ضروری اے۔
  • اردو پاکستان کی قومی زبان اے۔
  • عوام کو مواقع دیے جائیں گے کہ وہ اپنی زندگیاں قرآن وسنت کے مطابق بسر کریں۔
  • عدلیہ آزاد ہوگی۔ عدلیہ کی آزادی کی ضمانت دی جاتی اے۔
  • قرآن مجید کی اغلاط سے پاک طباعت کے لیے خصوصی انتظامات کیے جائیں گے۔
  • عصمت فروشی، جؤا، سود اور فحش لٹریچر پر پابندی عائد کی جائے گی۔
  • عربی زبان کو فروغ دیا جائے گا طلبہ وطالبات کے آٹھویں جماعت تک عربی کی تعلیم لازمی قرار دی گئی۔
  • آئین کی روسے مسلمان سے مراد وہ شخص اے جو اللہ کو ایک مانے، آسمانی کتابوں پر ایمان لائے، فرشتوں، یوم آخرت اور انبیائے کرام پر ایمان رکھے اور حضوراکرم ﷺ کو اللہ کا آخری نبی تسلیم کرے۔ جو شخص ختم نبوت ﷺ کا منکر ہوگا وہ دائرہ اسلام سے خارج تصور کیا جائے گا۔

نگار خانہ[لکھو]

بیرونی رابطے[لکھو]

  • قومی اسمبلی پاکستان؛ [http*//www.scribd.com/doc/16810770/Constitution-of-Pakistan-1973-in-Urdu-ver اسلامی جمہوریۂ پاکستان کا دستور]
  • پاکستان کے دستور کا ایک [http*//www.scribd.com/doc/4836055/The-Constitution-Of-Pakistan-1973-Part-01 اردو ترجمہ]

حوالے[لکھو]

سانچہ:آئین پاکستان

حوالے[لکھو]